Monthly Archives: August 2012

Allah’s Saying : O My Servants [Hadith e Qudsi] (حدیثِ قُدسی)

Standard

 


[Sahih Muslim : Book 32, Number 6246]

Abu Dharr (Radi Allah Anhu) reported Allah’s Messenger (sal-allahu-alleihi-wasallam) as saying that Allah, the Exalted and Glorious, said:

“O My servants, I have made oppression unlawful for Me and unlawful for you, so do not commit oppression against one another.”

“O My servants, all of you are liable to err except one whom I guide on the right path, so seek right guidance from Me so that I should direct you to the right path.

“O My servants, all of you are hungry (needy) except one whom I feed, so beg food from Me, so that I may give that to you.”

“O My servants, all of you are naked (need clothes) except one whom I provide garments, so beg clothes from Me, so that I should clothe you.”

“O My servants, you commit error night and day and I am there to pardon your sins, so beg pardon from Me so that I should grant you pardon.”

“O My servants, you can neither do Me any harm nor can you do Me any good.”

“O My servants, even if the first amongst you and the last amongst you and even the whole of human race of yours, and that of jinns even, become (equal in) God-conscious like the heart of a single person amongst you, nothing would add to My Power.”

“O My servants, even if the first amongst you and the last amongst you and the whole human race of yours and that of the Jinns too in unison become the most wicked (all beating) like the heart of a single person, it would cause no loss to My Power.”

“O My servants, even if the first amongst you and the last amongst you and the whole human race of yours and that of jinns also all stand in one plain ground and you ask Me and I confer upon every person what he asks for, it would not. in any way, cause any loss to Me (even less) than that which is caused to the ocean by dipping the needle in it.”

“O My servants, these for you I shall reward you for than, so he who deeds of yours which I am recording finds good should praise Allah and he who does not find that should not blame anyone but his own self.”

Sa’id said that when Abu Idris Khaulini (Radi Allah Anhu) narrated this hadith he knelt upon his knees.

Advertisements

میری جان پاکستان

Standard

میرے پیارے وطن پاکستان کو سالگرہ مبارک ہو


پاکستان صرف ایک زمین کا ٹکڑا نہیں ، یہ میرا سب کچھ ہے ، میرا بچپن ،

میری جوانی ، میری خوشیاں ، میرے پیارے ، میرے دوست اور ان سب سے

متعلق میری یادیں سب اس سے جڑی ہوئی ہیں ۔ یہ میری پہچان ہے میرا فخر ہے

یہ میری جان ہے

 

محبت ہے مجھے اپنے وطن سے، اس کی ثقافت سے ، اسلامی اقدار سے

گلیوں سے چوباروں سے ، ندیوں سے ، پہاڑوں سے، جھیلوں سے آبشاروں سے

مسجدوں سے میناروں سے ، موسموں سے ، فضاوں سے ، ہواُوَں سے

ہر چیز سے ۔ ۔ ۔

 

وطن سے محبت ایمان کا حصہ ہے ۔ مجھے افسوس ہوتا ہے اور ترس آتا ہے

ان لوگوں پر جو پاکستانی ہوتے ہوئے پاکستان کو برا بھلا کہتے ہیں ۔ آج اگر

حالات خراب ہیں تو یہ اور کسی کا نہیں بلکہ صرف ہمارا قصور ہے ۔ یہ ملک

دین اسلام کے نام پہ ہمیں اللہ عزوجل نے عطا کیا تھا ۔ اور آج یہ سب عذاب ہم

پر مسلط ہیں ظالم حکمران، مہنگائی، بجلی، گیس، پانی کی قلت کی صورت میں

کیوں کہ ہم نے اس کی قدر نہ کی ۔ ناشکری کی ، اللہ کی نافرمانی کی ۔ ۔ ۔ یہ سب

ہمارے برے اعمال اور اجتماٰعی گناہوں کا نتیجہ ہے۔

 

لیکن میں مایوس نہیں کہ اگر ہم سب بحیثیت قوم اللہ سے اپنے گناہوں کی معافی مانگیں

اور اللہ کے حضور توبہ کریں اور اپنے انفرادی فائدہ کی بجائے اس پاک سرزمین کے

فائدے کہ لیئے جدوجہد کریں اور خود بھی اس کو نقصان نہ پہنچائیں اور دوسروں کو

بھی روکیں ، تو انشااللہ ہمارا پیارا ملک پھر سے خوشحالی، امن، سلامتی کا گہوارہ بن جائے گا

 

زرا نم ہو تو یہ مٹی بڑی زرخیز ہے ساقی

 

موج بڑھے یا آندھی آئے ، دیا جلائے رکھنا ہے

گھر کی خاطر سو دُکھ جھیلیں ، گھر تو آخر اپنا ہے

 


خدا کرے میری ارض پاک پر اترے
وہ فصلِ گل جسے اندیشہء زوال نہ ہو

یہاں جو پھول کھلے وہ کِھلا رہے برسوں
یہاں خزاں کو گزرنے کی بھی مجال نہ ہو

یہاں جو سبزہ اُگے وہ ہمیشہ سبز رہے
اور ایسا سبز کہ جس کی کوئی مثال نہ ہو

گھنی گھٹائیں یہاں ایسی بارشیں برسائیں
کہ پتھروں کو بھی روئیدگی محال نہ ہو

خدا کرے نہ کبھی خم سرِ وقارِ وطن
اور اس کے حسن کو تشویش ماہ و سال نہ ہو

ہر ایک خود ہو تہذیب و فن کا اوجِ کمال
کوئی ملول نہ ہو کوئی خستہ حال نہ ہو

خدا کرے کہ میرے اک بھی ہم وطن کے لیے
حیات جرم نہ ہو زندگی وبال نہ ہو

(احمد ندیم قاسمی )


Khuda Karay Ke Meri Arz-e-Pak Per Utray
Wo Fasl-e-Gul Jisay Andesha-e-Zawaal Na Ho

Yahan Jo Phool Khilay, Khila Rahay Sadi’on
Yahan Khizaan Ko Guzarnay Ki Bhi Majaal Na Ho

Yahan Jo Sabza Ugay, Hamesha Sabz Rahay
Aur Aisa Sabz Ke Jis Ki Koi Misaal Na Ho

Khuda Karay Ke Na Kham Ho Sir-e-Waqar-e-Watan
Aur Is Ke Husn Ko Tashweesh-e-Mah-o-Saal Na Ho

Her Aik Fard Ho, Tahzeeb-o-Fun Ka Oaj-e-Kamaal
Koi Malool Na Ho, Koi Khasta Haal Na Ho

Khuda Karay Ke Meray Aik Bhi Hum’Watan Ke Leay
Hayaat Jurm Na Ho, Zindagi Wabaal Na Ho

Khuda Karay Ke Meri Arz-e-Pak Per Utray
Wo Fasl-e-Gul Jisay Andesha-e-Zawaal Na Ho