Category Archives: Urdu

posts in urdu language

عشق ، محبت ، عقیدت

Standard

سنا ہےکہ جب کسی سے عشق ہوتا ہے تو اس سے جڑی ہر چیز سے محبّت اور عقیدت ہو جاتی ہے
اُس کی باتیں
اُس کی کتابیں 
اُس کا گھر 
گھر کے در و دیوار سے
یہاں تک کہ
اُس کے گھر میں لگے فانوس سے بھی عقیدت ہو جاتی ہے 

یا اللہ اپنے آپ کو تیرا عاشق کہنے کے قابل تو نہیں سمجھتا کہ عشق تو دور محبت کا حق بھی نہیں ادا کیا ۔ لیکن یااللہ یہ سچ ہے کہ تیرے اور تیرے حبیب صل اللہ علیہ و آلہ وسلم کے گھر سے ، اس کے در و دیوار سے ، اس کی زمین سے ، اس کی گرد سے ، اس کی ہواوں سے فضاوں سے ، یہاں تک کہ اس کے فانوسوں سے بھی عقیدت و محبت اپنے دِل میں محسوس کی ہے ۔
یا اللہ اس بات کے بہانے اپنے اور اپنے حبیب صل اللہ علیہ و آلہ وسلم کے عاشقوں میں ابد تک کے لیئے میرا نام لکھ دے ۔ آمین 

Zakhm phoolo’n ki tarah mehkain gay par dekhe ga kon? (زخم پھولوں کی طرح مہکیں گے پر دیکھے گا کون)

Standard


اب کے رُت بدلی تو خوشبو کا سفر دیکھے گا کون

زخم پھولوں کی طرح مہکیں گے پر دیکھے گا کون

دیکھنا سب رقصِ بسمل میں مگن ہو جائیں گے

جس طرف سے تیر آئے گا ادھر دیکھے گا کون

زخم جتنے بھی تھے سب منسوب قاتل سے ہوئے

تیرے ہاتھوں کے نشاں اے چارہ گر دیکھے گا کون

وہ ہوس ہو یا وفا ہو بات محرومی کی ہے

لوگ تو پھل پھول دیکھیں گے شجر دیکھے گا کون

میری آوازوں کے سائے میرے بام ودر پہ ہیں

میرے لفظوں میں اُتر کر میرا گھر دیکھے گا کون

ہر کوئی اپنی ہوا میں مست پھرتا ہے فرازؔ

شہر نا پرساں میں تیری چشمِ تر دیکھے گا کون

Kaaba pe pari jab pehli nazar (کعبے پہ پڑی جب پہلی نظر)

Standard

2017-03-06 20.48.54

کعبے پہ پڑی جب پہلی نظر، کیا چیز ہے دنیا بھول گیا
یوں ہوش و خرد مفلوج ہوئے، دل ذوقِ تماشہ بھول گیا

پھر روح کو اذنِ رقص ملا، خوابیدہ جُنوں بیدار ہوا
تلؤوں کا تقاضا یاد رھا نظروں کا تقاضا بھول گیا

احساس کے پردے لہرائے، ایمان کی حرارت تیز ہوئی
سجدوں کی تڑپ اللہ اللہ، سر اپنا سودا بھول گیا

پہنچا جو حرم کی چوکھٹ تک، اک ابر کرم نے گھیر لیا
باقی نہ رہا پھر ہوش مجھے، کیا مانگا اور کیا کیا بھول گیا

جس وقت دعا کو ہاتھ اٹھے، یاد آ نا سکا جو سوچا تھا
اظہارِ عقیدت کی دُھن میں اظہارِ تمنا بھول گیا

ہر وقت برستی ہے رحمت کعبے میں جمیل ، اللہ اللہ
خاکی ہوں میں کتنا بھول گیا

عاصی ہوں میں کتنا بھول گیا

کعبے پہ پڑی جب پہلی نظر، کیا چیز ہے دنیا بھول گیا
یوں ہوش و خرد مفلوج ہوئے، دل ذوقِ تماشہ بھول گیا

020416_0845_2.png

اللہ عزوجل رب العزت  الرحمان الرحیم الکریم نے

مجھ حقیر فقیر خاکی و عاصی گنہگار پہ خاص کرم کیا اور مجھے اپنے ماں باپ اور بیوی بچہ سمیت اپنے گھرپر حاضری کا  شرف بخشا  اور اپنے حبیب صل اللہ علیہ وآلہ وسلم کے روضہ اطہر پہ بھی حاضری کا شرف بخشا

ساری زندگی ہر سانس کے ساتھ اللہ رب العزت کا شکر کروں تو ایک لمحے کا بھی حق ادا نہیں ہو سکتا ۔  جو کیفیت اور احساسات وہاں ہوتے ہیں اُنہیں صحیح معنی میں الفاظ کے محدود احاطے میں بیان کرنا نہ ممکن ہے ۔  مکہ مکرمہ میں بیت اللہ شریف  میں اللہ کا جلال اور عظمت رُو پزیر ہے ۔  اور مدینہ منورہ میں خاتم النبیین رحمت اللعالمین صل اللہ علیہ و آلہ وسلم کی رحمت ، محبت ، انوارات کے نور اور سکون کا سماں ہے ۔ بندہ وہاں جا کر ، بلکہ جب یہاں سے رختِ سفر ہی باندھتا ہے تو دنیا کی سوچیں ، پریشانیاں ، بکھیڑے ، مستقبل کی فکر   ، غرض ہر چیز سے بے فکر اور بے نیاز ہو جاتا ہے ۔  یہ بھی اللہ کا کرم اور فضل ہے ۔

اللہ مجھے  اور سب کو بار بار اپنے گھر بلائے اور اپنے حبیب ہمارے آقا سرکارِ عالم رحمت العالمین نبیِ رحمت حضرت محمد مصطفٰی صل اللہ علیہ و آلہ وسلم کے روضہ مبارک پہ حاضری کی توفیق عطا فرمائے آمین

کوشش کروں گا کے اپنے سفرِ حرم کے اور خیالات اور واقعات یہاں گوشگزار کروں

Transliteration in roman urdu:

Allah Azawajal Rab ul Izzat Al Rahman Ak Raheem Al Kareem ne

Mujh haqeer faqeer khaki o aassi gunehgaar pay khaas karam kya aur mujhe apne maa baap aur biwi bachay sameit Apne ghar par haazri ka sharf bakhsha aur Apne Habib SalAllah o Aleh Wa Aalehi Wasallam ke Roza At’her pay bhi haazri ka ssharf bakhsha

Saari zindagi har saans ke sath Allah Rab ul Izzat ka shukar karoon to aik lamhay ka bhi haq ada nahi ho sakta. jo kefiyat aur ehsasaat wahan hotay hain unhen sahih maienay mein alfaaz ke mehdood ihatay mein bayan karna na mumkin hai. Makkah  Mukaramah mein Bait Ullah Shareef mein Allah ka Jalaal aur Azmat roo pazeer hai, aur Madina Munawwara mein Khaatim ul Nabiyeen Rehmat ulilaalameen Salallah o Aleh Wa Aalehe Wa Sallam ki Rehmat, Mohabbat, Anwaraat ke Noor aur Sukoon ka samaa hai. Banda wahan ja kar, balkay jab yahan se rakhtِ e safar hi baandhta hai to duniya ki sochen, pareshaniya, bakherray, mustaqbil ki fikr, gharz har cheez se be-fikar aur be-niaz ho jata hai. yeh bhi Allah ka karam aur fazl hai .

Allah mujhe aur sab ko baar baar Apne ghar bulaye aur apne Habib hamaray Aaqa Sarkar e Aalam Rehmat Ulilaalameen Nabi e Rehmat Hazrat Muhammad Mustafa Salalallah o Alehe Wa Aalehe Wasallam ke Roza Mubarak pay haazri ki tofeeq ataa farmaye Ameen

Koshish karoon ga ke apne safrِ e haram ke aur khayalat aur waqeat yahan gosh-guzar karoon

Tum Na Jaan Pao Ge – Gulzar (تم نہ جان پاؤ گے – گلزار)

Standard

34200130-cms

شہر کے دوکاندارو ______ کاروبارِ الفت میں

سود کیا زیاں کیا ہے ______ تم نہ جان پاؤ گے

دل کے دام کتنے ہیں _____ خواب کتنے مہنگے ہیں

اور نقدِ جاں کیا ہے

تم نہ جان پاؤ گے

کوئی کیسے ملتا ہے _____ پھول کیسے کھلتا ہے

آنکھ کیسے جھکتی ہے _____ سانس کیسے رُکتی ہے

کیسے رہ نکلتی ہے ______ کیسے بات چلتی ہے

شوق کی زباں کیا ہے

تم نہ جان پاؤ گے

وَصل کا سکوں کیا ہے ______ ہجر کا جنوں کیا ہے

حُسن کا فسوں کیا ہے ______ عشق کے دروں کیا ہے

تم مریضِ دانائی ______ مصلحت کے شیدائی

راہِ گمراہاں کیا ہے

تم نہ جان پاؤ گے

زخم کیسے پھلتے ہیں ______ داغ کیسے جلتے ہیں

درد کیسے ہوتا ہے ______ کوئی کیسے روتا ہے

اشک کیا ہیں نالے کیا ______ دشت کیا ہیں چھالے کیا

آہ کیا فغاں کیا ہے

تم نہ جان پاؤ گے

نا مُرادِ دل کیسے ______ صبح شام کرتے ہیں

کیسے زندہ رہتے ہیں ______ اور کیسے مرتے ہیں

تم کو کب نظر آئی ______ غمزدوں کی تنہائی

زیست بے امان کیا ہے

تم نہ جان پاؤگے

جانتا ہوں میں تم کو ______ ذوقِ شاعری بھی ہے

شخصیت سجانے میں ______ اِک یہ ماہری بھی ہے

پھر بھی حرف چُنتے ہو ______ صرف لفظ سُنتے ہو

اِن کے درمیاں کیا ہے

تم نہ جان پاؤ گے

__________

جاوید اختر

020416_0845_2.png

Shehar Ke Dukandaro ___ Karobaar-E-Ulfat Mein

Sood Kia Zian Kia Hai ___ Tum Na Jaan Pao Gay

Dil Ke Daam Kitne Hein ___ Khuwab Kitne Mehnge Hein

Aur Naqd-E-Jaan Kia Hai

Tum Na Jaan Pao Gay

Koi Kaisay Milta Hai ___ Phool Kaisay Khilta Hai

Aankh Kaisay Jhukti Hai ___ Saans Kaisay Rukti Hai

Kaisay Reh Nikalti Hai ___ Kaisay Baatein Chalti Hai

Shouq Ki Zabaan Kya Hai

Tum Na Jaan Pao Gay

Wasl Ka Sukoon Kya Hai ___ Hijr Ka Junoon Kya Hai

Husn Ka Fusoon Kya Hai ___ Ishq Ke Daroon Kya Hai

Tum Mareez-E-Danai ___ Maslihat Ke Shaydai

Raah-E-Gumrahan Kya Hai

Tum Na Jaan Pao Gay

Zakhm Kaisay Phaltay Hein ___ Daagh Kaisay Jaltay Hein

Dard Kaisay Hota Hai ___ Koi Kaisay Rota Hai

Ashq Kia Hai Nalay Kia ___ Dasht Kia Hai Chalay Kia

Aah Kia Fughaan Kya Hai

Tum Na Jaan Pao Gay

Namuraad Dil Kaisay ___ Subah Shaam Kartay Hein

Kaisay Zinda Rehtay Hein ___ Aur Kaisay Martay Hein

Tum Ko Kab Nazar Aayi ___ Ghamzadoon Ki Tanhai

Zeest Be-Umaan Kia Hai

Tum Na Jaan Pao Gay

Janta Hoon Mein Tum Ko ___ Zouq-E-Shaiyri Bhi Hai

Shaksiyat Sayjanay Mein ___ Ik Yeh Mahiri Bhi Hai

Phir Bhi Harf Chuntay Ho ___ Sirf Lafz Suntay Ho

In Ke Darmiyaan Kya Hai

Tum Na Jaan Pao Gay

______________________

~~ Gulzar ~~

Note: To best view this post please install these beautiful Urdu fonts: Alvi Nastaleeq / Jameel Noori (kasheeda) and other fonts from thispublic shared Urdu Fonts folder

Koi to Hai Jo Nizam e hasti chala raha hai – Muzaffar Warsi – Hamd

Video

کوئی تو ہے جو ـــــ نظامِ ہستی چلا رہا ہے ـــــ وہی خدا ہے

حمد خواں : مظفر وارثی

Hamd: Koi to hai jo nizaam e hasti chala raha hai , Wohi KHUDA Hai
Reciter: Muzaffar Warsi

“THE” best and most favorite Hamd recitation of all time.

Audio version on soundcloud for easier listening and downloading :


 

کوئی تو ہے جو ـــــ نظامِ ہستی چلا رہا ہے ـــــ وہی خدا ہے

دکھائی بھی جو نہ دے ـــــ نظر بھی جو آرہا ہے ـــــ وہی خدا ہے

 
وہی ہے مشرق ـــــ وہی ہے مغرب ـــــ سفر کریں سب اُسی کی جانب

ہر آئینے میں جو عکس اپنا دکھا رہا ہے ــــــ وہی خدا ہے

 
تلاش اُس کو نہ کر بتوں میں ــــــ وہ ہے بدلتی ہوئی رُتوں میں

جو دن کو رات اور رات کو دن بنا رہا ہے ــــــ وہی خدا ہے

 
نظر بھی رکھے ،سماعتیں بھی ـــــ وہ جان لیتا ہے نیتیں بھی

جو خانہء لاشعور میں جگمگا رہا ہے ــــــ وہی خدا ہے

 
کسی کو سوچوں نے کب سراہا ــــــ وہی ہوا جو خدا نے چاہا

جو اختیارِ بشر پہ پہرے بٹھا رہا ہے ـــــ وہی خدا ہے

 
کسی کو تاجِ وقار بخشے ــــ کسی کو ذلت کے غار بخشے

جو سب کے ماتھے پہ مہرِ قدرت لگا رہا ہے ـــــ وہی خدا ہے

 
سفید اُس کا سیاہ اُس کا ـــــ نفس نفس ہے گواہ اُس کا

جو شعلہء جاں جلا رہا ہے ـــــ بُجھا رہا ہے ـــــ وہی خدا ہے

ـــــــــــــــــــــــ

مظفر وارثی

 

Koi to hai jo __ nizam e hasti chala raha hai __ Wohi KHUDA Hai
Dikhai bhi jo na de __ nazar bhi jo aa raha hai __ Wohi KHUDA Hai

Wohi hai mashriq __ wohi hai maghrib __ safar karain sab usi ki jaanib
Har aainay main jo aks apna dikha raha hai __ Wohi KHUDA Hai

Talaash Us ko na kar b’utoN main __ Wohi KHUDA Hai
Jo din ko raat aur raat ko din bana raha hai __ Wohi KHUDA Hai

Nazar bhi rakhay , sama’atain bhi __ Woh jaan leta hai niyatain bhi
Jo khaana E la-shaoor jagmaga raha hai __ Wohi KHUDA Hai

Kisi ko socho’n ne kab saraha __ wohi hua jo KHUDA ne chaha
Jo ikhtiyar e bashr pe pehray bitha raha hai __ Wohi KHUDA Hai

Kisi ko taj E waqar bakhshay __ Kisi ko zillat ke ghaar bakhshay
Jo sab ke maathay pe mohr e qudrat laga raha hai __ Wohi KHUDA Hai

Safaid Us ka siyah Us ka __ nafas nafaz hai gawah Us ka
Jo shola e jaa’n jalaa raha hai __  bujha raha hai __  Wohi KHUDA Hai
_____
Muzaffar Warsi