Category Archives: Urdu

posts in urdu language

بچپن ۔ ۔ یادیں ۔ ۔ زندگی

Standard

ایک وقت تھا جب ہمارے گھر میں ایک پل بھی خاموشی نہیں ہوتی تھی. گھر بہن بھائیوں کے شور شرابے، ہنسی مذاق، کلکاریوں اور لڑائی جھگڑے کی آوازوں سے گونجتا رہتا تھا۔

صبح کے وقت سب کو اپنی اپنی پڑی ہوتی:
بستر میں لیٹے ہوئے ابو جی کی آواز کانوں میں پڑتی: جلدی جلدی سب اٹھو اور سبق پڑھنے مسجد جاؤ۔
امی جی کہہ رہی ہوتیں: سب آ کر ناشتہ کر لو۔
ایک بھائی بولتا: میرے کپڑے کدھر ہیں؟
ایک بہن بولتی: مجھے جوتے نہیں مل رہے۔
تیسرے کی آواز آتی: میرا بیگ نہیں مل رہا۔
ابو جی! مجھے پاکٹ منی دیجیے۔
ایک واش روم میں گھسا ہے اور باقی انتظار میں کھڑے ہیں۔
ہر ایک اپنا رونا رو رہا ہوتا۔
ہم بہن بھائیوں کا امی جی کے گلے لگنا۔ ان سے پیار لے کر سکول جانا۔
واپسی پر پھر وہی حال۔ طوطے کی طرح بولتے جانا۔ بہن بھائیوں کا لڑنا جھگڑنا۔ ہنس ہنس کر لوٹ پوٹ ہو جانا۔ کبھی دوست کرنا اور کبھی کاٹ کرنا۔

چیزوں کا ہر طرف بکھرے ہونا۔ پورے کمرے میں ادھر اُدھر پڑے ہوئے کپڑے۔ ہماری امی جی کا پورا دن گھر کی صفائی ستھرائی اور ان چیزوں کو سنبھالنے میں گزر جانا۔ ہم بہن بھائیوں کا ادھر اُدھر بھاگتے پھرنا۔ کبھی پکڑنا پکڑائی کھیلنا اور کبھی کوئی دوسرا کھیل کھیلنا۔ کبھی ہنسنا اور کبھی رونا۔ کبھی گڑیا تو کبھی سائیکل۔

آج میں اسی گھر میں بیٹھا ہوا ہے۔ ہر طرف ایک عجیب سا سکون، خاموشی اور امن چھایا ہوا ہے۔ نہ کوئی شور شرابہ ہے اور نہ قہقہوں کی آوازیں۔ نہ کوئی لڑائی جھگڑا رہا اور نہ مل بیٹھ کر کھانا۔ بستر خالی پڑے ہیں۔ ہر چیز سلیقے سے رکھی ہوئی ہے۔ الماری میں ہمارے امی ابو جی کے محض چند جوڑے لٹکے ہوئے ہیں۔ اب نہ صبح کے وقت ہنگامہ برپا ہوتا ہے اور نہ ہی چھٹی کے وقت۔

ایک بھائی دنیا سے ہی رخصت ہو گیا۔ دوسرا دوسری جگہ شفٹ ہو گیا۔ باقی دونوں بھائی شام کو تھکے ہوئے کام سے لوٹتے ہیں۔ تینوں بہنوں کی شادیاں ہو گئیں۔ اب اگر کچھ باقی رہ گیا تو وہ ہر ایک کی اپنی اپنی خوشبو ہے جو ہر کمرے اور ہر چیز سے اٹھ رہی ہے۔ ان حسین لمحات کی یادیں ہیں جو ماضی بن چکے ہیں۔ آج میں ان میں سے ایک ایک کی خوشبو محسوس کرکے اپنے خالی دل کو بھرنے کی اور اپنے آنسو روکنے کی ناکام کوشش کر رہا ہوں۔

مہینوں بعد ہم سب بہن بھائی کہیں اکٹھے ہو پاتے ہیں۔ تھوڑا سا وقت اکٹھا گزارتے ہیں، کچھ دیر گپ شپ کرتے ہیں اور پھر سب اپنے اپنے گھروں کو چل پڑتے ہیں۔ پھر ہر طرف وہی خاموشی چھا جاتی ہے۔

بعض دفعہ میں سوچتا ہوں کہ کاش ہم بڑے ہی نہ ہوتے۔ کاش وہ بچپن پھر سے لوٹ آتا۔ لیکن پھر میں اللہ کا شکر اور سب کی خوشی کی دعا کرتا ہوں۔

اگر آپ ابھی چھوٹے ہیں تو اس وقت کو خوب انجوائے کریں۔ ہر طرف محبت اور پیار کے پھول بکھیریں۔ اپنے امی ابو،دادا دادی اور نانا نانی کا خوب خیال رکھیں۔ ایک دوسرے کے ساتھ بھرپور وقت گزاریں۔

اگر آپ گھر کے بڑے یا بڑی ہیں تو تب بھی اپنے بچوں کے ساتھ خوب انجوائے کریں۔ ان کے ساتھ کھیلیں۔ ان کو خوب لاڈ پیار دیں۔ ان کی اچھی تربیت کیجیے۔

اگر گھر گندا ہوتا ہے تو ہونے دیں۔ کمروں میں سامان بکھرتا ہے تو بکھرنے دیں۔ دروازے کھلے رہتے ہیں تو رہنے دیں۔ بچے شور شرابہ کرتے ہیں تو کرنے دیں۔ یہ سب بعد میں بھی ٹھیک اور درست ہو سکتا ہے۔ لیکن آپ سب کا ایک دوسرے کے ساتھ بیتا ہوا یہ وقت کبھی لوٹ کر نہیں آئے گا۔ بس یادیں، اپنی اپنی خوشبوئیں اور آنسو بھری مسکراہٹیں رہ جائیں گی۔ لہذا اس وقت کو ہر ممکن طریقے سے حسین سے حسین تر بنانے کی کوشش میں لگے رہیں اور اپنے ہر رشتے کی قدر کریں۔ موبائل اور ٹی وی وغیرہ میں مگن ہو کر اپنے ماں باپ اور بیوی بچوں یا شوہر کا حق ہرگز نہ ماریں۔ ورنہ بعد میں صرف پچھتاوے اورحسرتیں باقی رہ جائیں گی۔


نوٹ : یہ تحریر واٹس ایپ سے کاپی پیسٹ ہے ۔ کسی کو اس کا اصل مصنف معلوم ہو تو ضرور بتائیں ۔

Advertisements

Zindagi aise guzaaro ke Hayaat sanwar jaye (زندگی ایسے گزارو کہ حیات سنور جائے)

Standard


فقیر نے میرا ہاتھ پکڑا اور میری مُٹھی عجوہ کھجوروں سے بھر دی، فرمایا کھاؤ اور ساتھ بٹھا کے فرمانے لگے

بتاؤ تو حیاتی کس کو کہتے ہیں؟

میں نے کہا زندگی کو؟

تو میرے سر پر ہلکی سی چپت لگا کر فرمانے لگے نہیں نکمے حیاتی تو وہ ہوتی ہے جسے کبھی موت نہیں آتی ۔ دیکھو نہ اللہ تعالٰی کا ایک ایک لفظ ہیرے یاقوت و مرجان سے زیادہ پیارا اور قیمتی اور نصیحتوں سے بھرپور ہے

اللّٰه نے یہ نہیں کہا کہ اِسلام مکمل ضابطہِ زندگی ہے بلکہ یوں کہا کہ مکمل ضابطہِ حیات ھے اور حیاتی تو مرنے کے بعد شروع ہو گی جسے کبھی موت نہیں آئے گی

پھر گلاس میں میرے لیئے زم زم ڈالتے ہُوئے فرمانے لگے میرے بیٹے اللّٰہ نے زندگی دی ہے حیات کو سنوارنے کے لیئے نہ کہ بگاڑنے کے لیئے تو یہ زندگی بھی بھلا کوئی حیاتی ھے جسکو موت آ جائے گی ؟ اصل تو وہ حیات ھے جِسکو کبھی زوال نہیں کبھی موت نہیں

تو زندگی ایسے گزارو کہ حیات سنور جائے

اور میں زندگی میں تب پہلی بار سمجھا کہ اسلام مکمل ضابطہ حیات ہے کا اصل مطلب کیا ھے


020416_0845_2.png

Note: for best view, install Mehr Nastaleeq Font

Main jis tarah ke bhi khwaab likhun – Mohsin Naqvi (میں جس طرح کے بھی خواب لکھوں – محسن نقوی)

Standard

AquaSixio-Digital-Art-57be93b1d104b__880.jpg

میں آڑھے ترچھے خیال سوچوں

کہ بے ارادہ ۔ ۔ ۔ کتاب لکھوں؟

کوئی ۔ ۔ ۔ شناسا غزل تراشوں

کہ اجنبی ۔ ۔ ۔ انتساب لکھوں ؟

گنوا دوں اک عمر کے زمانے ۔ ۔ ۔

کہ ایک پل کے ۔ ۔ ۔ حساب لکھوں

میری طبیعت پر منحصر ہے

میں جس طرح کا ۔ ۔ ۔ نصاب لکھوں

یہ میرے اپنے مزاج پر ہے

عذاب ۔ ۔ ۔ سوچوں، ثواب ۔ ۔ ۔ لکھوں

 

طویل تر ہے سفر تمہیں کیا؟

میں جی رہا ہوں مگر ۔ ۔ ۔ تمہیں کیا؟

 

مگر تمہیں کیا کہ تم تو کب سے

میرے ۔ ۔ ۔ ارادے گنوا چکے ھو

جلا کے ۔ ۔ ۔ سارے حروف اپنے

میری ۔ ۔ ۔ دعائیں بجھا چکے ھو

میں رات اوڑھوں ۔ ۔ ۔ کہ صبح پہنوں ؟

تم اپنی رسمیں ۔ ۔ ۔ اٹھا چکے ھو

سنا ہے ۔ ۔ ۔ سب کچھ ۔ ۔ ۔ بھلا چکے ھو

 

تو  اب میرے دل پہ ۔ ۔ ۔ جبر کیسا؟

یہ دل تو حد سے گزر چکا ہے

خزاں کا موسم ۔ ۔ ۔ ٹھہر چکا ہے

ٹھہر ۔ ۔ ۔ چکا ہے مگر تمہیں کیا؟

گزر ۔ ۔ ۔ چکا ہے مگر تمہیں کیا؟

 

مگر تمہیں کیا ۔ ۔ ۔ کہ اس خزاں میں

میں جس طرح کے ۔ ۔ ۔ بھی خواب لکھوں

~ محسن نقوی ~

020416_0845_2.png

main aarhay tirchey khayal sochun

ke be-irada … kitaab likhun

koi shanasa … ghazal tarashun

ke ajnabi … antisaab likhun

ganwa’dun ik umr ke zamane …

ke har ik pal ke … hisaab likhun

meri tabiyat pe munhisar hai

main jis tarah ka … nisaab likhun

ye mere apne mizaaj par hai

azaab … sochon , sawaab … likhun

 

taweel tar hai safar, tumhe kya ?

main jee raha hon magar … tumhe kya ?

 

magar tumhe kya ke tum to kab se

mere … iradey ganwa chuke ho

jala ke … saare haroof apne

meri … duaen bhuja chuke ho,

main raat orhon … ke subah pehno’n

tum apni rasmein … utha chuke ho

suna hai … sab kuch … bhula chuke ho

 

to ab mere dil pe … jabar kesa?

ye dil to hadd se guzar chuka hai

khizaan ka mausam … thehar chuka hai

thehar chuka hai magar tumhe kya?

 

magar tumhe kya … ke iss khizaan me

main jis trah ke … bhi khwaab likhun

~ Mohsin Naqvi ~

Image : https://aquasixio.deviantart.com/
Note: To best view this post please install these beautiful Urdu fonts: Alvi Nastaleeq / Jameel Noori (kasheeda) and other fonts from thispublic shared Urdu Fonts folder