Tag Archives: my rambling

بلا عنوان

Standard

گھر میں ابو جی  اور امی جی نے کچھ مرغیاں پال رکھی ہیں ۔ ایک مرغا اور ۳ تین مرغیاں  ہیں ۔ دیسی انڈوں کے علاوہ فائدے یہ ہیں کہ ایک تو ابو جی کو ایک مصروفیت مل گئی ہے اور چھوٹُو  کو جیتے جاگتے کھلونے ۔

آج صبح ناشتہ کرتے ہوئے ایک واقعہ ہوا ۔  بیگم بھی ساتھ بیٹھی ناشتہ کر رہی تھی ۔ مرغا مرغیاں دروازے  کے باہر تھے ۔ بیگم  اپنی ڈبل روٹی، بران بریڈ ،  سے چند چھوٹے  چھوٹے ٹکڑے دروازے کے پاس پھینک رہی تھی ۔ مرغا اندر آتا تھا اور وہ ٹکڑا منہ میں اٹھا کر کسی نہ کسی مرغی کے سامنے رکھتا تھا کہ وہ کھا لے  ۔ اور مرغی وہ ٹکڑا کھا لیتی تھی ۔ اسی طرح شروع کے ۴-۵ ٹکڑے اُس نے مرغیوں کو کھلائے  پھر کہیں ایک دانہ خود کھایا

میں یہ سب دیکھ رہا تھا اور ساتھ والے کمرے سے ابو اور امی کے چھوٹوُ کے ساتھ کھیلنے کی آوازیں آ رہی تھیں  اور میرے چہرے پہ بس ایک ہلکی سی مسکراہٹ ، دماغ میں یادیں اوردل میں تشکر تھا

Advertisements

Yaadain ….

Standard

………………. I kept staring at this pic for so long …. It has invoked so many memories that I’m still swimming in them … and I think I will be like this for many more minutes …and yes the fan fight was real .. and me being the eldest exploited the authority to the fullest 🙂 

… wo bhi kia din thay … zindagi kitni saada aur pursukoon thi …. wo charpaia’n aur bistray bichana .. aur apni charpai pe kisi aur ko na letnay dena ta ke jab khud leto to bister thanda thanda ho 🙂

… garmion main khulay asmaaan talay sonay ka jo maza hai wo bass wohi jaanta hai jo soya ho …. un dino ye mobile shobile aam nhi tha .. na late night call packages na sms bundles ka jhanjat na mobile games ka alam ghalam …   raat chand ko taktay,  aur sitaaron ko gintay gintay aur hazaron idher udher ki sochain sochtay so jatay thay …. toot’tay taray bhi gintay thay ….

aur subhai’n itni noorani hoti thi … taaza saaf hawa main lambi lambi saansain lete thay …. aisa maza aata tha ke bayan nhi ho sakta …. murgho’n ki azaanai’n …aur chirrio’n ki cheh ch’hahat … suraj tulu’u honay ke waqt aasman ka jo rang hota tha  … ahhhh .. wo to bhool bhi gaya ab

… ab to raat ko sheher ki masnui roshni ki chaka chond ki wajah se sitaray bhi nazar nhi aatay …. Air Conditioned band rooms main recycled filtered thandi hawa main sansain lete hain … 10 bajay k baad uthtay hain aur sab se pehle side table pe moble check kartay hain .. aur raat ko .. haha .. kabhi yaadain satayen to aisi post likh kar so jatay hain aur aglay din wohi machinee zindagi ki dorr main lag jatay hain … fitay munh !