Tag Archives: Urdu

Koi ban gaya ronaq pakhiya’n di – Baba Fareed(کوئی بن گیا رونق پکھیاں دی – بابا فرید)

Standard

koi ban gaya ronaq pakhaya di.JPG

020416_0845_2.png

koi ban gaya ronaq pakhiya’n di

koi chorr ke sheesh mahal chaleya

koi paleya naaz te nakhraya’n vich

koi raet garam tay thal chaleya

koi bhul gaya maqsad aavan da

koi kar ke maqsad hal chaleya

aethay har koi ‘fareed’ musafir ae

koi aj chaleya koi kal chaleya

Advertisements

Mohabbatain baanto , nafratain na baanto

Video

Mohabbatain baanto , nafratain na baanto

Jaisa ke humaray pyaray Nabi Rehmat ul ilalameen Salalahu Alehe Wasallam ne Mohabbatain baanti.

“Nabi Salalahu Alehe Wasallam jis ne kaafiron ke sath ye hamdardi ki ke qatal karne walon ke liye dua maangi . Aur tum musalmaan ho ke aik doosre ko salaam karna chorr chukay ho .. aik doosre ke peechay namaz parhna chorr chukay ho .. aik doosre pe kufr ke fatway laga ke bethay huay ho“

A must listen and a message to all muslims no matter what maslak you belong to.

Zindagi aise guzaaro ke Hayaat sanwar jaye (زندگی ایسے گزارو کہ حیات سنور جائے)

Standard


فقیر نے میرا ہاتھ پکڑا اور میری مُٹھی عجوہ کھجوروں سے بھر دی، فرمایا کھاؤ اور ساتھ بٹھا کے فرمانے لگے

بتاؤ تو حیاتی کس کو کہتے ہیں؟

میں نے کہا زندگی کو؟

تو میرے سر پر ہلکی سی چپت لگا کر فرمانے لگے نہیں نکمے حیاتی تو وہ ہوتی ہے جسے کبھی موت نہیں آتی ۔ دیکھو نہ اللہ تعالٰی کا ایک ایک لفظ ہیرے یاقوت و مرجان سے زیادہ پیارا اور قیمتی اور نصیحتوں سے بھرپور ہے

اللّٰه نے یہ نہیں کہا کہ اِسلام مکمل ضابطہِ زندگی ہے بلکہ یوں کہا کہ مکمل ضابطہِ حیات ھے اور حیاتی تو مرنے کے بعد شروع ہو گی جسے کبھی موت نہیں آئے گی

پھر گلاس میں میرے لیئے زم زم ڈالتے ہُوئے فرمانے لگے میرے بیٹے اللّٰہ نے زندگی دی ہے حیات کو سنوارنے کے لیئے نہ کہ بگاڑنے کے لیئے تو یہ زندگی بھی بھلا کوئی حیاتی ھے جسکو موت آ جائے گی ؟ اصل تو وہ حیات ھے جِسکو کبھی زوال نہیں کبھی موت نہیں

تو زندگی ایسے گزارو کہ حیات سنور جائے

اور میں زندگی میں تب پہلی بار سمجھا کہ اسلام مکمل ضابطہ حیات ہے کا اصل مطلب کیا ھے


020416_0845_2.png

Note: for best view, install Mehr Nastaleeq Font

عشق ، محبت ، عقیدت

Standard

سنا ہےکہ جب کسی سے عشق ہوتا ہے تو اس سے جڑی ہر چیز سے محبّت اور عقیدت ہو جاتی ہے
اُس کی باتیں
اُس کی کتابیں 
اُس کا گھر 
گھر کے در و دیوار سے
یہاں تک کہ
اُس کے گھر میں لگے فانوس سے بھی عقیدت ہو جاتی ہے 

یا اللہ اپنے آپ کو تیرا عاشق کہنے کے قابل تو نہیں سمجھتا کہ عشق تو دور محبت کا حق بھی نہیں ادا کیا ۔ لیکن یااللہ یہ سچ ہے کہ تیرے اور تیرے حبیب صل اللہ علیہ و آلہ وسلم کے گھر سے ، اس کے در و دیوار سے ، اس کی زمین سے ، اس کی گرد سے ، اس کی ہواوں سے فضاوں سے ، یہاں تک کہ اس کے فانوسوں سے بھی عقیدت و محبت اپنے دِل میں محسوس کی ہے ۔
یا اللہ اس بات کے بہانے اپنے اور اپنے حبیب صل اللہ علیہ و آلہ وسلم کے عاشقوں میں ابد تک کے لیئے میرا نام لکھ دے ۔ آمین 

Zakhm phoolo’n ki tarah mehkain gay par dekhe ga kon? (زخم پھولوں کی طرح مہکیں گے پر دیکھے گا کون)

Standard


اب کے رُت بدلی تو خوشبو کا سفر دیکھے گا کون

زخم پھولوں کی طرح مہکیں گے پر دیکھے گا کون

دیکھنا سب رقصِ بسمل میں مگن ہو جائیں گے

جس طرف سے تیر آئے گا ادھر دیکھے گا کون

زخم جتنے بھی تھے سب منسوب قاتل سے ہوئے

تیرے ہاتھوں کے نشاں اے چارہ گر دیکھے گا کون

وہ ہوس ہو یا وفا ہو بات محرومی کی ہے

لوگ تو پھل پھول دیکھیں گے شجر دیکھے گا کون

میری آوازوں کے سائے میرے بام ودر پہ ہیں

میرے لفظوں میں اُتر کر میرا گھر دیکھے گا کون

ہر کوئی اپنی ہوا میں مست پھرتا ہے فرازؔ

شہر نا پرساں میں تیری چشمِ تر دیکھے گا کون